» » » Agar Tabeer mumkin ho, to aAao khwab dekhen hum... ♥

اگر تعبیر ممکن ہو تو
آؤ خواب دیکھیں ہم !!
چلو آزاد ہو جائیں
علاقوں سے ۔۔۔۔۔۔۔۔ زبانوں سے
محبت کے نگر میں ہم
چلوآباد ہو جائیں!!
کسی ایسے نشیمن میں
جہاں نہ رنگ نسلیں ہوں
جہاں نہ ذات کی باتیں ہوں
جہاں ہم کو ملے ۔۔۔۔۔ فقط انساں !!
فقط انساں !! فقط انساں
جہاں نہ روز بکتا ہو انصاف منصف کا
بِضداہواکی بیٹی کی یوں نہ بازار میں اجڑے
نہ روئیں اپنے جیون کواجڑتی گود والی ماں
نہ راوی روز لکھتا ہوقلم اور روشنائی سے
لہو کی داستانوں کو !!
اگر تعبیر ممکن ہو تو
آؤ خواب دیکھیں ہم !!
چلو یہ خواب دیکھا ہے
بدلتی رُت تاریخوں کی
کہ یہ جب اک نسل ہوتی ہے
تو آہیں بھی بھرتی ہے
کہ پھریہ وقت آتا ہے
کہ لہریں بھی جوش کھاتی ہیں 
تڑپ سے مسکرانے میں اک پل نہیں لگتا
یہ تو قانونِ قدرت ہے
کہ جب بھی کوئی گرتا ہے تو اگلے پل سنبھلتا ہے
بلندی ہو یا پستی !!
متبادل اک دوجے کا یہاں تکمیل پایا ہے
اگر انساں آمادہ ہوتومقدرکوبدلنے پر
تو وہ قادر بدلتا ہے !!
رُکی تاریخ قوموں کی!!
اگرتعبیر ممکن ہو تو!!
آؤ خواب دیکھیں ہم!

شیئر کیا ہے ہمارے ریڈر صبا نے



About Admin

Hi there! I am the admin of this page, am not the author of the post. I am pleased to share this news with you; you can express your expression as comment in below comment area….this news’ copy right is reserved by the author/publisher mentioned there. Thanks
«
Next
Newer Post
»
Previous
Older Post

No comments:

Leave a Reply


فریش فریش خبرین اور ویڈیوز


Random Posts

Loading...