» » » ہم صبا ہیں تو ذرا جھوم کے مل بھی ہم سے

ہم صبا ہیں تو ذرا جھوم کے مل بھی ہم سے
تو کلی ہے تو کوئی روز میں کھل بھی ہم سے

ہم کہ جب بھی تری آنکھوں کے سفر پر نکلیں
آن ملتا ہے تری آنکھ کا تل بھی ہم سے

کھینچ لیتا ہے تسلی بھی کہیں سینے سے
چھین لیتا ہے ترا درد تو دل بھی ہم سے

درد اک سِل ہے بہت بھاری ترے رستوں کی
ہجر اُٹھواتا ہے ہر روز یہ سِل بھی ہم سے

تازہ ہو جائے گا دوبارہ بچھڑنے کا ملال
دُور جاتا ہے تو کچھ دیر کو مِل بھی ہم سے


About News Desk

Hi there! I am the admin of this page, am not the author of the post. I am pleased to share this news with you; you can express your expression as comment in below comment area….this news’ copy right is reserved by the author/publisher mentioned there. Thanks
«
Next
Newer Post
»
Previous
Older Post

No comments:

Leave a Reply


فریش فریش خبرین اور ویڈیوز


Random Posts

Loading...