» » » کبھی اپنی ہنسی پر بھی آتا ہے غصہ: مکمل شاعری پڑھنے کے لئے پڑھیں

کبھی اپنی ہنسی پر بھی آتا ہے غصہ،
کبھی سارے جہاں کو ہسنا نے کو جی چاہتاہے۔

کبھی چھپالیتے ہیں غموں کو کونے میں، 
کبھی کسی کو سب کچھ سنانے کو جی چاہتاہے۔

کبھی روتا نہیں دل کسی قمیت پر، 
کبھی یونہی آنسوں بہانےکوجی چاہتاہے ۔

کبھی اچھالگتا ہے آزاد اڑنا ، 
کبھی کسی بندھن میں بندھ جانےکوجی چاہتاہے ۔

کبھی لگتے ہیں اپنے بیگانے سے، 
کبھی بیگانوں کو اپنا بنانے کوجی چاہتاہے ۔

کبھی اوپر والےکانام نہیں آتا ذباں پہ،
کبھی اسی کومنانے کوجی چاہتاہے ۔

کبھی لگتی ہے یہ ذندگی بڑی سہانی، 
کبھی ذندگی سےاٹھ جانے کو جی چاہتاہے۔




About Admin

Hi there! I am the admin of this page, am not the author of the post. I am pleased to share this news with you; you can express your expression as comment in below comment area….this news’ copy right is reserved by the author/publisher mentioned there. Thanks
«
Next
Newer Post
»
Previous
Older Post

No comments:

Leave a Reply


فریش فریش خبرین اور ویڈیوز


Random Posts

Loading...