Express ☺ your view, expression on this post, via Facebook comment in the below box… (do not forget to tick Also post on facebook option)

Showing posts with label HabibJalibPoetry. Show all posts
Showing posts with label HabibJalibPoetry. Show all posts

Monday, March 19, 2018

حبیب جالد مشہور زمانہ شاعری : یہ وزیرانِ کرام

حبیب جالد مشہور زمانہ شاعری : یہ وزیرانِ کرام

یہ وزیرانِ کرام

کوئی ممنونِ فرنگی، کوئی ڈالر کا غلام
دھڑکنیں محکوم ان کی لب پہ آزادی کا نام
ان کو کیا معلوم کس حالت میں رہتے ہیں عوام
یہ وزیرانِ کرام

ان کو فرصت ہے بہت اونچے امیروں کے لیے 
ان کے ٹیلیفون قائم ہیں سفیروں کے لیے 
وقت ان کے پاس کب ہے ہم فقیروں کے لیے 
چھو نہیں سکتے انہیں ہم ان کا اونچا ہے مقام
یہ وزیرانِ کرام

صبح چائے ہے یہاں تو شام کھانا ہے وہاں 
کیوں نہ ہوں مغرور چلتی ہے میاں ان کی دکاں 
جب یہ چاہیں ریڈیو پر جھاڑ سکتے ہیں بیاں 
ہم ہیں پیدل، کار پر یہ کس طرح ہوں ہمکلام
یہ وزیرانِ کرام

قوم کی خاطر اسمبلی میں یہ مر جاتے بھی ہیں 
قوتِ بازو سے اپنی بات منواتے بھی ہیں 
گالیاں دیتے بھی ہیں اور گالیاں کھاتے بھی ہیں 
یہ وطن کے آبرو ہیں کیجیے ان کو سلام
یہ وزیرانِ کرام

ان کی محبوبہ وزارت، داشتائیں کرسیاں 
جان جاتی ہے تو جائے پر نہ جائیں کرسیاں 
دیکھیے یہ کب تلک یوں ہی چلائیں کرسیاں 
عارضی ان کی حکومت عارضی ان کا قیام
یہ وزیرانِ کرام





حبیب جالب شاعری :  یہ سوچ کر نہ مائلِ فریاد ہم ہوئے

حبیب جالب شاعری : یہ سوچ کر نہ مائلِ فریاد ہم ہوئے

یہ سوچ کر نہ مائلِ فریاد ہم ہوئے 
آباد کب ہوئے تے کہ برباد ہم ہوئے

ہوتا ہے شاد کام یہاں کون با ضمیر
ناشاد ہم ہوے تو بہت شاد ہم ہوئے

پرویز کے جلال سے ٹکرانے ہم بھی ہیں 
یہ اور بات ہے کہ نہ فرہاد ہم ہوئے

کچھ ایسے بھا گئے ہمیں دنیا کے رنج و غم
کوے بتاں میں بھولی ہوئ یاد ہم ہوئے

جالب تمام عمر ہمیں یہ گماں رہا
اس زلف کے خیال سے آزاد ہم ہوئے 





حبیب جالب شاعری :  اب تیری ضرورت بھی بہت کم ہے مری جاں

حبیب جالب شاعری : اب تیری ضرورت بھی بہت کم ہے مری جاں

اب تیری ضرورت بھی بہت کم ہے مری جاں
اب شوق کا کچھ اور ہی عالم ہے مری جاں

اب تذکرۂ خندۂ گل بار ہے جی پر
جاں وقفِ غمِ گریۂ شبنم ہے مری جاں

رخ پر ترے بکھری ہوئی یہ زلفِ‌سیہ تاب
تصویر پریشانیِ عالم ہے مری جاں

یہ کیا کہ تجھے بھی ہے زمانے سے شکایت
یہ کیا کہ تری آنکھ بھی پر نم ہے مری جاں

ہم سادہ دلوں پر یہ شبِ غم کا تسلط
مایوس نہ ہو اور کوئی دم ہے مری جاں

یہ تیری توجہ کاہے اعجاز کہ مجھ سے
ہر شخص ترے شہر کا برہم ہے مری جاں

اے نزہتِ مہتاب ترا غم ہے مری زیست
اے نازشِ خورشید ترا غم ہے مری جاں





حبیب جالب شاعری :  یہ اور بات تیری گلی میں نہ آئیں ہم

حبیب جالب شاعری : یہ اور بات تیری گلی میں نہ آئیں ہم

یہ اور بات تیری گلی میں نہ آئیں ہم
لیکن یہ کیا کہ شہر ترا چھوڑ جائیں ہم

مدّت ہوئی ہے کوئے بتاں کی طرف گئے 
آوارگی سے دل کو کہاں تک بچائیں ہم

شاید بقیدِ زیست یہ ساعت نہ آ سکے 
تم داستانِ شوق سنو اور سنائیں ہم

بے نور ہو چکی ہے بہت شہر کی فضا
تاریک راستوں میں کہیں کھو نہ جائیں ہم

اُس کے بغیر آج بہت جی اداس ہے 
جالب چلو کہیں سے اسے ڈھونڈ لائیں ہم





Saturday, March 17, 2018

حیب جالب : اس دیس کا رنگ انوکھا تھا اس  دیس کی بات نرالی تھی

حیب جالب : اس دیس کا رنگ انوکھا تھا اس دیس کی بات نرالی تھی

حیب جالب : اس دیس کا رنگ انوکھا تھا اس  دیس کی بات نرالی تھی

اس دیس کا رنگ انوکھا تھا اس دیس کی بات نرالی تھی
نغموں سے بھرے دریا تھے رواں گیتوں سے بھری ہریالی تھی


اس شہر سے ہم آ جائیں گے، اشکوں کے دیپ جلائیں گے 
یہ دور بھی آنے والا تھا یہ بات بھی ہونے والی تھی


وہ روشن گلیاں یاد آئیں، وہ پھول وہ کلیاں یاد آئیں 
سُندر من چلیاں یاد آئیں، ہر آنکھ مدھر متوالی تھی


کس بستی میں آ پُہنچے ہم، ہر گام پر ملتے ہیں سو غم
پھر چل اس نگری میں ہمدم ہر شام جہاں اُجیالی تھی


وہ بام و در وہ راہگذر، دل خاک بسر جاں خاک بسر
جالب وہ پریشان حالی بھی کیا خوب پریشاں حالی تھی





انقلابی شاعرحبیب جالب کی نظمیں،غزلیں :  بندے کو خدا کیا لکھنا

انقلابی شاعرحبیب جالب کی نظمیں،غزلیں : بندے کو خدا کیا لکھنا

انقلابی شاعرحبیب جالب کی نظمیں،غزلیں :  بندے کو خدا کیا لکھنا

ظلمت کو ضیاء صر صر کو صبا بندے کو خدا کیا لکھنا
پتھر کو گُہر، دیوار کو دَر، کرگس کو ہُما کیا لکھنا

اک حشر بپا ہے گھر گھر میں، دم گھُٹتا ہے گنبدِ بے دَر میں 
اک شخص کے ہاتھوں مدت سے رُسوا ہے وطن دنیا بھر میں 

اے دیدہ ورو اس ذلت سے کو قسمت کا لکھا کیا لکھنا
ظلمت کو ضیاء صر صر کو صبا بندے کو خدا کیا لکھنا

یہ اہلِ چشم یہ دارا و جَم سب نقش بر آب ہیں اے ہمدم
مٹ جائیں گے سب پروردۂ شب، اے اہلِ وفا رہ جائیں گے ہم

ہو جاں کا زیاں، پر قاتل کو معصوم ادا کیا لکھنا
ظلمت کو ضیاء صر صر کو صبا بندے کو خدا کیا لکھنا

لوگوں ہی پہ ہم نے جاں واری، کی ہم نے انہی کی غم خواری
ہوتے ہیں تو ہوں یہ ہاتھ قلم، شاعر نہ بنیں گے درباری

ابلیس نُما انسانوں کی اے دوست ثنا کیا لکھنا
ظلمت کو ضیاء صر صر کو صبا بندے کو خدا کیا لکھنا

حق بات پہ کوڑے اور زنداں، باطل کے شکنجے میں ہے یہ جاں 
انساں ہیں کہ سہمے بیٹھے ہیں، خونخوار درندے ہیں رقصاں 

اس ظلم و ستم کو لطف و کرم، اس دُکھ کو دوا کیا لکھنا
ظلمت کو ضیاء صر صر کو صبا بندے کو خدا کیا لکھنا

ہر شام یہاں شامِ ویراں، آسیب زدہ رستے گلیاں 
جس شہر کی دھُن میں نکلے تھے، وہ شہر دلِ برباد کہاں 

صحرا کو چمن، بَن کو گلشن، بادل کو رِدا کیا لکھنا
ظلمت کو ضیاء صر صر کو صبا بندے کو خدا کیا لکھنا

اے میرے وطن کے فنکارو! ظلمت پہ نہ اپنا فن وارو
یہ محل سراؤں کے باسی، قاتل ہیں سبھی اپنے یارو

ورثے میں ہمیں یہ غم ہے مِلا، اس غم کو نیا کیا لکھنا
ظلمت کو ضیاء، صَر صَر کو صبا، بندے کو خدا کیا لکھنا





Follow us on social media to get instent updates....

|Twitter| |Facebook| |Pinterst| |Myvoicetv.com|
Example

Send your news/prs to us at myvoicetv.outlook.com..

Note: The views, comments and opinions expressed on this news story/article do not necessarily reflect the official policy or position of the management of the website. Companies, Political Parties, NGOs can send their PRs to us at myvoicetv@outlook.com

 
‎لطیفے اور شاعری‎
Facebook group · 8,142 members
Join Group
یہ گروپ آپ سب کے لئے ہے۔ پوسٹ کیجئے اور بحث کیجئے۔۔۔۔۔ اپنی آواز دوسروں تک پہنچائے۔۔۔اور ہاں گروپ کو بڑا کرنے کے لئے اپنے دوستوں کو بھی گروپ میں دعو...
 

All Categories

Aaj Kamran Khan ke Saath Aamir Liaquat Hussain Aapas ki Bat NajamSethi Abdul Qadir Hassan AchiBaatain Afghanistan Aga Khan University Hospital AirLineJobs Allama Iqbal America Amjad Islam Amjad Anjum Niaz Ansar Abbasi APP Aqwal Zareen Articles Ayat-e-Qurani Ayaz Amir Balochistan Balochistan Jobs Bank of Khyber Banking Best Quotes Biwi Jokes Blogger Tips Chaltay Chaltay by Shaheen Sehbai China Chitral Coca-Cola Coke Studio Columns CookingVideos Corporate News Corruption Crimes Dr Danish ARY Sawal Yeh Hai Dubai E-Books EBM Education Educational Jobs Emirates English #Quotes English Columns EnglishJokes Funny Photos Funny Talk Shows Funny Videos Gilgit-Baltistan Girls Videos Govt Jobs HabibJalibPoetry Hamid Mir Haroon Al-Rashid Hasb-e-Haal with Sohail Ahmed Hassan Nisar Hassan Nisar Meray Mutabaq Hazrat Ali AS Sayings HBL Health HikayatShaikhSaadi Hospital_Jobs Huawei Hum Sab Umeed Say Hain India Information Technology Insurance International News Islam Islamabad Islamic Videos JammuKashmir Javed Chaudhry Jazz Jirga with Salim Safi Jobs Jobs Available Jobs in Karachi Jobs in KPK Jobs in Pak Army Jobs_Sindh JobsInIslamabad Jokes Jubilee Insurance Kal Tak with Javed Chaudhry Karachi Kashmir KhabarNaak On Geo News Khanum Memorial Cancer Hospital Khara Sach With Mubashir Lucman Khyber Pakhtunkhwa Lahore Latest MobilePhones Lenovo LG Life Changing Stories LifeStyle Live With Dr. Shahid Masood Live with Talat Hussain Maulana Tariq Jameel MCB Bank Microsoft Mobilink Mujeed ur Rahman Shami Munir Ahmed Baloch Nasir Kazmi Nazir Naji News News Videos NGO Nokia North Korea Nusrat Javed Off The Record (Kashif Abbasi) Off The Record With Kashif Abbasi On The Front Kamran Shahid OPPO Orya Maqbool Jan Pakistan Pakistan Army Pakistan Super League Pashto Song Photos Poetry Political Videos Press Release Prime Time with Rana Mubashir PTCL Punjab Quetta Quotes Rauf Klasra Samsung Sar-e-Aam By Iqrar-ul-Hasan Sardar Jokes Saudi Arabia ShiroShairi Show Biz Sikander Hameed Lodhi Sindh Social Media Sohail Warriach Songs Sports News Stories Syria Takrar Express News Talat Hussain Talk Shows Technology Telecommunication Telenor To the point with Shahzeb Khanzada Tonight with Moeed Pirzada Turkey Tweets of the day Ufone University Jobs Urdu Ghazals Urdu News Urdu Poetry UrduLateefay Video Songs Videos ViVO Wardat SamaaTV WaridTel Wasi Shah Zong اردو خبریں
______________ ☺ _____________ _______________ ♥ ____________________
loading...